نیوز الرٹ

اب کشمیر مکمل پاکستان کاحصہ ھے

.

بھارت پر ہمیشہ پاکستان کے خلاف جنگی جنون سوار رہتا ہے۔اور اس سلسلے میں وہ پاکستان سے دو جنگیں۔بھی لڑ چکاھے ۔بھارت اے روز نت نی بھونڈی حرکتیں کرتا رہتا ہے کبھی لائن اف کنٹرول کے اس پار بلا اشتعال فائرنگ کرکے۔کبھی پلوامہ کا ڈرامہ رچا کر۔کبھی اجمل قصاب جیسے لوگوں کے زریعے اپنے املاک اور لوگوں پر حملہ کراکر۔ کبھی گھلبوشن جیسے دہشت گرد پاکستان میں گھسا کر۔کبھی پاکستان کے خلاف فلمیں بناکر مگر اس کی یہ تمام ناپاک سازشیں کسی طرح بھی کامیاب نہ ہو سکیں ۔اور بھارت کو ہر محاظ پر زلت اور رسوائی اس کا مقدر ٹھہری۔الحمد اللہ ہماری پاک فوج،ہمارے سیکورٹی ادارے،ہمارے حساس ادارے ، ہماری خفیہ ایجنسیاں ، اتنی مظبوط اور ہائی الٹ ہیں۔وہ ملک کے دشمنوں پر دن رات ملک کے اندر اور باہر نظر رکھے ہوے ہیں ۔ بھارت پاکستان کو دنیا میں بدنام کرنے اور اسے کمزور کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتا۔بھارت پاکستان کے خلاف فرضی وایلا کرتا رہتاہے ۔اور پاکستان عالمی دنیا میں پختہ ثبوتوں کے ساتھ اس کا مکرو چہرہ دکھا کر بھارت کو گندہ کرتا ہے۔جب جب پاکستان نے مقبوضہ کشمیر کے لوگوں۔کے حق خودارادیت کی بات کی تب تب اس نے میں مختلف انداز میں پاکستان کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی۔اس وقت پوری دنیا میں بھارت کا مکرہ چہرہ سب کے سامنے اچکا ھے اور دنیا دیکھ رہی ھے۔کہ کس طرح وہ مقبوضہ کشمیر کی عوام پر ظلم وبربریت ڈھارھاہے۔اور ایک سال سے کشمیری عوام سب جیل کی صورت اپنے ہی گھروں میں قید کی زندگی بسر کررہے ہیں۔
پاکستان نے مقبوضہ کشمیر کو پاکستان کے نقشے میں شامل کر لیا ھے اس اقدام پر بھارت جل بھون ریا ہے دوسری طرف ان سب لوگوں کے منہ پر زناٹے دار تھپڑ ھے ،جو یہ کہتے نہ تھکتے تھے۔کہ جنرل باجوہ اور عمران خان نے مل کر کشمیر کو بیچ دیا ھے ۔۔کہاں گی وہ جماعت اور جمعیت کے منافق۔؟ اور دیگر سیاسی جماعتوں کے بچے جمہورے ۔یہ نقشہ پاک فوج اور حکومت کی مکمل حکمت عملی پختہ یقین کی عکاس ھے۔ کہ ہماری حکومت اور فوج کشمیر کی ازادی تک چین سے نہیں بیٹھے گے۔ اور کشمیر کے حالات پر مکمل نظر رکھے ہوے ھے ۔ہم اب اکیلے نہیں ھے ۔چین دوست ہمارے ساتھ کھڑا ھے ۔اب منزل بہت قریب ھے ۔بقول جنرل اصف غفور۔دشمن
کو سرپرائز دینے کو تیار بیٹھے ہیں ۔
اس وقت ہماری وفاقی کابینہ نے جو پاکستان کا نیا سیاسی و سرکاری نقشہ جاری کیا ہے اور اس نقشے میں پورے کشمیر کو پاکستان کا حصہ دکھایا ہے۔ اور حکومت پاکستان اس نقشے کو لے کر اقوام متحدہ میں پیش کرنے بھی جا رہی ہے ۔ ہم سب پاکستانی قوم اس بات کی نہ صرف تائید کرتے ہیں بلکہ اس اقدام کو عزت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔اور جب جب بات پاکستان کی سالمیت کی ہوگی تو پوری پاکستانی قوم متحد اور اپس کے تمام اختلاف بھلا کر ایک ہو کر اپنی حکومت اور پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی رے گی اور تاریخ اس بات کی گواہ بھی ہے ۔ اج ہم بڑے یقین اور مکمل اعتماد اور ایمانداری سے اس بات کو سمجھتے ہیں کہ کشمیر ایمان۔ کے زور پر آزاد ہوگا ۔ اور جہاد اللہ اکبر کے سوا کوئی دوسرا راستہ کشمیر کی آزادی کی طرف جاتا ہی نہیں ہے ۔
‏نقشے میں موجود کشمیر کی شمولیت عالمی سطح پر بہت بڑا قدم ہے ۔ سرکاری نقشے اور اور دوسرے نقشوں میں بہت فرق ہوتا ہے ۔ جب تک یہ نقشہ ہمارے سفارت خانوں اور ویب سائٹس پر موجود رہے گا عالمی دنیا میں عالمی سطح پر مقبوضہ کشمیر موضوع بحث بنا رہے گا۔ اس نقشے نے اپنے اثر چھوڑ دیے ہیں۔ بھارتی میڈیا دیکھ لیں ۔ آج پاکستان کے منتخب نمائندے ، حکومت اور اپوزیشن اور عسکری قیادت ایک پلیٹ فارم پر کھڑی ہو کر برملا یہ اعلان کر رہی ہے۔ کہ تقسیم ہند کے موقع پر لارڈ ماؤنٹ بیٹن اور ریڈ کلف کی طرف سے کھینچی گئی غیر منصفانہ اور خونی لکیر کا خاتمہ ہی اصل میں برصغیر میں پائیدار امن ترقی اور خوشحالی کی ضمانت ہے ۔

About ویب ڈیسک

Check Also

پھولوں سے نزاکت چھین لو

آج اعلیٰ الصبح جب سیر کے لئے باغ کا طرف رخ کیا تو کچھ بیزار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے