ڈائریکٹر سائبر کرائم وقار احمد چوہان کی قومی نصاب کمیٹی کے سربراہ رفیق طاہر اور ان کی ٹیم سے ملاقات

سائبر کرائمز ، ان سے بچاؤ کے طریقے، سزا کے حوالے سے قوانین اور سوشل میڈیا کے مؤثر، مثبت اور محفوظ طریقہ استعمال کو نصاب کا حصہ بنانے کی تجویز پیش کی گئی
والدین کے لیے حقیقت پر مبنی کیس سٹڈیز کے ذریعے ہدایات کو بھی نصاب کا حصہ بنانے کی تجویز دی گئی.
سائبر کرائم کی صورت میں متعلقہ ادارے (سائبر کرائم ونگ ایف آئی اے) سے رابطے کے حوالے سے معلومات کو بھی نصاب کا حصہ بنانے کے عمل پر تبادلہ خیال کیا گیا.
ڈائریکٹر وقار احمد چوہان نے کہا کہ ابتدائی جماعت سے ہی طلبا کو سائبر کرائم کے حوالے سے مضامین کو نصاب کا حصہ بنا کر آٸندہ چند سالوں میں سائبر کرائم کی شرح کو کم کیا جا سکتا ہے
قومی نصاب کمیٹی کے سربراہ نے مزکورہ تجاویز کو سراہا اور کہا کہ نصاب سازی کے عمل اور سائبر کرائمز کی تدریس کے حوالے سے اساتزہ کے تربیتی کورسز میں بھی سائبر کرائم ونگ ایف آئی اے کے ماہرین کی خدمات حاصل کی جائیں گی۔

About ویب ڈیسک

Check Also

چیف کمشنر کو اثاثہ جات ڈکلیئر کرنے کا حکم

اسلام آباد() اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے سروس جوائن کرنے سے اب تک اپنے اثاثہ جات ڈکلیئر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے