سی ڈی آر ایس کے تعاون سے صحافیوں میں راشن کی تقسیم

(رپورٹ کائنات ملک )
گزشتہ روز کیپری ہنسو ڈیزاسٹر ریسپانس سروسز (سی ڈی آر ایس) کے تعاون سے ملک کے مختلف حصوں میں صحافیوں میں خوراک اور ادویات کی تقسیم کی گئی جن میں صحافی برادری میں دوسو راشن کے تھیلے تقسیم کیے گئے سی ڈی ار ایس ملک میں کرونا وائرس کے حوالے سے پیدا شدہ معاشی صورتحال کےدوران پیدا ہونے والے انتہائی بحران سے دوچار لوگوں کی خدمت میں سرگرم عمل ہے۔ تنظیم کے چیئرمین نے جڑواں شہر میں صحافیوں کی انٹرنیشنل تنظیم فورتھ پیلر میڈیا واچ ڈاگ جس کے چئیرمین فاروق مرزا ہیں کی ٹیم کے ذریعہ سے دو سو کے قریب راشن کے تھیلےتقسیم کیے
سی ڈی آر ایس ٹیم پاکستان کے مختلف علاقوں میں کروانا وائرس کے حوالے سے متاثرہ معاشی صورتحال کو دیکھتے ہوے صحافیوں میں خوراک مہیا کرنے ،
اور صاف پانی کی فراہمی کے ساتھ ساتھ علاج معالجہ کی بنیادی سہولیات بھی فراہم کررہی ہے تنظیم کےچیئرمین نے کہا کہ اس وقت ملک بحران کی کیفیت سے دوچار ہے اور فیلڈ میں کام کرنے والے صحافیوں کو تقریبا دوسو راشن کے تھیلے عطیہ کیے ہیں اور مزید بھی راشن فراہمی کا وعدہ کیا۔راشن کو ان کے مرکزی دفتر سے G / 13/2 اسلام آباد میں صحافیوں کی انٹرنیشنل تنظیم فورتھ پیلر میڈیا ٹیم کے ذریعے تقسیم کیا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ پہلا موقع ہے جب کسی انسانی ہمدردی کے تحت بین الاقوامی تنظیم نے مقامی میڈیا کو اپنی حمایت اور خرمات فراہم کی۔ پاکستان میں میڈیا مالکان نے جس طرح صحافیوں کا معاشی قتل کیا ہے اس سے میڈیاصحافیوں کے خاندانوں کو بری طرح سے نقصان پہنچا ہے ڈائریکٹر ایڈمن ابرار بھٹی سی ڈی آر ایس
نےکہا کہ تنظیم کا مقصد نظرانداز طبقہ کی زندگیوں میں بہتری لانا ہے اس
سلسلےمیں ہم تعلیم تربیت کے ساتھ ساتھ معاشی مواقع اور معاشرتی خدمات پربھر پورتوجہ مرکوز کیے ہوے ہیں اس سلسلے میں ایسے اقدامات سے
ان کو صحت کی بنیادی سہولیات پینے کے صاف پانی کی فراہمی نوجوانوں اور خواتین کو بااختیار بنانا شامل ہے
اس سلسلے میں ہم تجربہ کار بہادر اور جزبہ خرمت سے سرشار ٹیم کو پاکستان کے مختلف حصوں میں کوروناوائرس کے وبائی امراض سے لڑنے والے لوگوں کے مختلف علاقوں میں تعینات کیاگیا ہے۔ڈائریکٹر آپریشنز پاکستان راجہ نبیل آزاد نے کہا کہ ٹیم فرنٹ لائن پر ہے تاکہ لوگوں کو حفاظتی اقدامات کے ساتھ ساتھ ان میں سماجی دوری کی اہمیت کے بارے میں آگاہی دی جا سکےاور ماسک اور دستانے ضرورت مندوں میں تقسیم کیے جاسکے بانی اور سی ای او سی ڈی آر ایس نے ٹیلیفونک گفتگو کے دوران کہا کہ ان کی تنظیم کورونا وائرس سے لڑنے کے لئے ہر ممکن وسائل کو بروئے کار لارہی ہے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے دور دراز کے علاقوں میں ان کی میڈیکل ٹیمیں بھی پہنچ رہی ہیں تاکہ بحران کے اس دور میں لوگوں کو علاج معالجہ کی بنیادی سہولیات کھانا اور پینے کا صاف پانی فراہم کیا جاسکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں ورکنگ صحافی اس وقت شدید معالی و معاشی بحران کا شکار ہیں اور ہم ان کے اہل خانہ کو را شن مہیا کریں گےانہوں نے کہا کہ جب سے بحران شروع ہوا ہے تب سے ڈی آر ایس کی ٹیمیں ترجیح بنیادوں پرامداد اور خوراک کی تقسیم کے لئے مندرجہ ذیل جن میں اسلام آباد نصیرآباد کراچی مظفرآباد مردا چترال ڈیرہ اسماعیل خان سجاول
ٹھٹھہ نوازشاہ سانگھڑ مردان
فیصل آباد راولپنڈی تھر چمن گجرات ۔
-چترال اوکاڑ دیر دیر سوبت پور کندھ
کوٹ کے علاقوں تک پہنچ گئی ہے
اور ڈی آر ایس سماجی خرمات فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ خواتین کو بااختیار بنانے پر بھی یقین رکھتی ہے اور سلسلہ میں پاکستان کے مختلف دیہی علاقوں میں خواتین کے لیے بہت سارے منصوبے تیار کررہی ہے۔ جن میں وہ خواتین کو ایسی مہارت تربیت دیں گے کہ اور بین الاقوامی مارکیٹ میں اپنے ہاتھوں سے بنی ہوئی اشیاء کوخرید فروخت کرسکیں اس کے علاوہ وہ ہنر مند خواتین کے ہنر میں مزید نکھار پیدا کرنے کے لیے کڑھائی سلائی کی کلاسوں کا اجرا بھی کر رہے ہیں اور انہیں فوٹو گرافی کی تعلیم تربیت بھی دے گے اس کے علاوہ لوگوں کو اپنی شادی شدہ زندگی کو اچھے انداز میں گزارنے کے بارے میں بھی اگاہی کے پروگراموں کا بھی انعقاد کرکے گے

About ویب ڈیسک

Check Also

سی پیک کی حفاظت ۔چینی فوج لداخ پہنچ گئی

ذرائع کے مطابق ‏سی پیک کو امریکہ اور بھارت سے خطرہ چینی طیارے اور ہیلی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے