حدیبیہ پیپرملزکیس؛ نیب کا سپریم کورٹ میں اپیل دائرکرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: نیب نے حدیبیہ پیپرز ملز سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔
قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے اعلامیہ جاری کیا گیا ہے جس کے مطابق نیب کی جانب سے حدیبیہ پیپر ملز کیس کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
اس سے قبل لاہور ہائی کورٹ نے حدیبیہ پیپر ملز کیس ختم کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور نیب نے ابتدائی طور پر حدیبیہ پیپر ملز کیس پر اپیل نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا مگر نیب کے اہم اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نیب ہائی کورٹ فیصلہ کے خلاف سپریم کورٹ میں کل اپیل دائر کرے گا۔ واضح رہے شریف خاندان نے حدیبیہ پیپرملز کیس سے متعلق نیب کے ریفرنسز کو ہائی کورٹ میں چیلنج کررکھا تھا۔

اس سے قبل عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ حدیبیہ پیپر مل کیس میں پورا شریف خاندان ملوث ہے،اس کیس میں نیب کی واپسی کی کوئی گنجائش نہیں۔ اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ حدیبیہ پیپر مل میں شریف خاندان نے 700 ملین کا فراڈ کیا ہے، اس کیس میں شریف خاندان کی جان جاتی ہے، امید ہے حدیبیہ پیپر مل کیس کا ٹرائل ہوگا کیونکہ اس میں پورا شریف خاندان ملوث ہے۔
عوامی مسلم لیگ کے سربراہ نے کہا کہ تمام جرائم کی ماں حدیبیہ پیپر مل کیس اب حتمی مرحلے میں ہے، حدیبیہ پیپر مل کیس میں عوامی مسلم لیگ کو پارٹی بنایا گیا ہے، میں یہ کیس بھی لطیف کھوسہ کے تعاون سے لڑوں گا ، نیب کے پاس ابھی دو دن ہیں کہ عدالت میں پیش ہوجائے، اس کیس میں نیب کی واپسی کی کوئی گنجائش نہیں، طلال چوہدری کی طرح ناچا گروپ نہیں ہوں میں بھنگڑے نہیں ڈال سکتا۔
واضح رہے کہ اس سے قبل بھی شیخ رشید نے حدیبیہ پیپر مل کیس کے متعلق بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر حدیبیہ پیپر مل کیس کھلا تو قوم پاناما کیس کو بھول جائے گی، حدیبیہ کیس نواز شریف کی سیاسی موت ثابت ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں