ٹماٹر کی قیمت میں‌ اضافے پر پنجاب اسمبلی میں دلچسپ بحث

لاہور : پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں پرائس کنٹرول پر بحث کا آغاز ہو گیا، پنجاب اسمبلی کا اجلاس ایک گھنٹہ35منٹ کی تاخیر سے شروع ہوا اور شیخ علاﺅ الدین نے کہاکہ ٹماٹر کا بحران ہے نہ کہ طوفان‘ مشکل وقت میں قوموں نے کتے اور بلیاں کھا کر بھی گزارا کیا۔ صوبائی وزیر شیخ علاﺅالدین نے کہا کہ حکومت نے ہی کسانوں کو شیلٹر مہیا کرنا ہے ہم نہیں دیں گے تو اور کون دے گا ،اسی لئے بھارت سے سبزیوں کی تجارت پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ پاکستانی کسانوں کے وسیع تر مفاد میں اس مرتبہ بھارت سے سبزیاں منگوانے کی اجازت نہیں دی گئی، ٹماٹر کی قیمت میں اچانک اضافہ ہونے کی وجہ بلوچستان میں ٹماٹر کی فصل کا وائرس کا شکار ہونا تھا جس کی وجہ سے قیمتوں میں اضافہ ہوا، اسی طرح پیاز کی قیمت میں بھی اضافہ ہوا تاہم اب قیمتیں کنٹرول میں ہیں۔ انہوں نے ایوان کو بتایا کہ ریگولیٹری ٹیکس بالکل جائز ہے جن چیزوں پر ٹیکس لگایا گیا ہے وہ کوئی غریب آدمی استعمال نہیں کرتا، نہ ہی کوئی نیوزی لینڈ سے منگوائے گئے سیب استعمال کرتا ہے جو5سو روپے کلو سیب خرید سکتا ہے وہ اس پر ٹیکس بھی دے سکتا۔ لیٹ نائٹ ہوٹلنگ پر بھی25فیصد ٹیکس عائد کیا جانا چاہئے۔ اسمبلی میں پرائس کنٹرول پر بحث میں دیگر اراکین اسمبلی نے بھی حصہ لیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں