فاروڈ بلاک کو کیسے روکا جائے، ن لیگی رہنماؤں‌ نے سر جوڑ لیے

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف سے سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار نے ملاقات کی جس میں ملکی سیاست اور پارٹی امور سمیت اہم معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار نے شہباز شریف سے لاہور میں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی جس میں مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ذرائع کے مطابق دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں پاناما کیس کی عدالتی کارروائی اور پارٹی پوزیشن پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس کے علاوہ شہباز شریف جنوبی پنجاب کے 37 ایم این ایز، جن میں کچھ وزیر بھی شامل ہیں، سے رابطے میں ہیں اور انہیں علیحدہ بلاک بنانے سے روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ جنوبی پنجاب کے ایم این ایز سے ملاقات کا مقصد مسلم لیگ (ن) کی اندرونی سیاست کو بچانا ہے۔

گزشتہ روز جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے وزیر برائے بین الصوبائی امور ریاض پیرزادہ نے بھی اپنے بیان میں کہا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کو بچانے کے لئے شہباز شریف پارٹی قیادت اپنے ہاتھ میں لے لیں۔ تین روز قبل شہباز شریف نے اسلام آباد میں ایک غیر سیاسی مگر انتہائی اہم شخصیت سے بھی ملاقات کی تھی۔ شہباز شریف نے لندن جانے سے پہلے بھی اسلام آباد میں ایک غیر سیاسی اہم شخصیت سے ملاقات کی تھی۔ اس بات کا بھی امکان ہے کہ شہباز شریف آئندہ چند روز میں پنجاب کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس طلب کریں جس میں اداروں سے محاذ آرائی کی سیاست نہ کرنے کے حوالے سے قرارداد منظور کروائی جائے۔ یاد رہے کہ چند دنوں میں شہباز شریف چوہدری نثار، خواجہ سعد رفیق، خواجہ آصف اور احسن اقبال سمیت متعدد اہم رہنماؤں سے ملاقات کر چکے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں