ڈالر کی بجائے مقامی کرنسی میں‌ لین کریں، ترک صدر

استنبول: امریکہ نے دنیا پر معاشی حکمرانی قائم کررکھی ہے اور بیشتر ممالک کے درمیان لین دین امریکی کرنسی ”ڈالر“ میں ہورہاہے لیکن اب ترک صدر طیب اردگان نے پاکستان سمیت 7ممالک کو مقامی کرنسی میں لین دین کرنے کی پیشکش کردی۔ ترک میڈیا کے مطابق استنبول میں ڈی 8 سمٹ اجلاس کے افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر نے بنگلہ دیش، مصر، انڈونیشیاء، ایران ، ملائیشیاء، نائجیریا ، پاکستان اور ترکی پر مشتمل ڈی 8گروپ کو آپس میں تجارت مقامی کرنسی میں کرنے کی تجویزدیدی اور کہاکہ اگر ایسا ہوتا ہے توہماری معیشت ناکام نہیں ہوگی، اس اقدام سے مقامی کرنسی میں تبادلے کی شرح میں اضافہ اور ڈالر کا دباﺅ کم ہوگا۔انہوں نے کہاکہ جب ہم اپنی مقامی اور قومی کرنسی میں تجارت کریں گے تو جیت ہمارے ملک کی ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں