انصاف ہو رہا ہے یا انصاف کو خون؟ نواز شریف

لندن: سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے صدر نواز شریف نے کہا کہ احتساب عدالت میں کسی کی غیر موجودگی میں اس پر فرد جرم عائد کرنے کی کوئی نظیر نہیں ملتی. اپنی رہائش گاہ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا یوں محسوس ہورہا ہے کہ جیسے انصاف نہیں ہو رہا بلکہ انصاف کا خون ہو رہا ہے. انہوں نے کہا کہ ہمارے خلاف جے آئی ٹی وٹس ایپ کالز پر من پسند افراد اور ہمارے مخالفین کو جے آئی ٹی میں شامل کیا گیا. نواز شریف نے کہا کہ اگر اس طرح کا انصاف ہونا ہے تو پھر سوائے شرمندگی کے اور کچھ نہیں ہے. انہوں نے چھبیس اکتوبر سے پہلے پاکستان پہنچنے کا اعلان بھی کیا.

نواز شریف کا کہنا تھا کہ عدالت نے انہیں اقامہ کی بنیاد پر نااہل قرار دیا حالانکہ الزام پاناما کیس اور کرپشن کا لگا. جب کرپشن ثابت نہ ہوسکی تو اقامہ کا بہانہ لگا دیا گیا. انہوں نے کہا کہ میں اپنی اہلیہ کلثوم نواز کی بیماری کی وجہ سے لندن میں ہوں ان کی طبیعت بہتر ہو رہی ہے. انہوں نے احتساب کے عمل پر ایک شعر بھی پڑھا. جس میں‌ انہوں نے عدالتی فیصلوں کو تنقید کا نشانہ بنایا.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں