کوئی ملی بھگت ہے تو سزا سنادیں، مریم نواز

اسلام آباد: مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے کہا ہے کہ انصاف کا تماشہ نہ بنائیں اگر کوئی ملی بھگت ہے تو سزا سنا دیں۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے نیب کی جانب سے دائر لندن فلیٹس ریفرنس پر میاں نوازشریف، مریم نواز اور ان کے شوہر محمد صفدر پر فرد جرم عائد کردی ہے۔ عدالتی کارروائی کےبعد باہر آکر میڈیا سے مختصر گفتگو میں مریم نواز نے کہا کہ ایک فیملی کے ٹرائل اور انصاف کا تماشہ نہ بنایا جائے، اگر کوئی ملی بھگت ہے تو سزا سنادیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ بڑے بڑے ڈبوں والے ثبوت کہاں چلے گئے، کیس میں فیصلہ پہلے ہوگیا اور مقدمہ بعد میں چل رہا ہے۔

اس سے قبل احتساب عدالت میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے مریم کا کہنا تھا کہ سزا پہلے سنائی گئی اور ٹرائل بعد میں ہورہا ہے۔ انہوں نے طنزیہ انداز میں کہا پہلی بار ایسا ہو رہا ہے کہ سیسیلین مافیا عدالتوں میں پیش ہورہے ہیں۔ مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف اسی ہفتے کے آخر یا آیندہ ہفتے واپس آجائیں گے، والدہ کی کیمو تھراپی ہورہی ہے اور صحت میں بہتری آرہی ہے تاہم ان کی مکمل ریکوری میں 6 ماہ لگ جائیں گے۔ خیال رہے کہ پاناما کیس کے فیصلے کے نوٹ میں سپریم کورٹ کے جج جسٹس آصف سعید کھوسہ نے مشہور ناول ’گاڈ فادر‘ اور سیسیلین مافیا کا ذکر کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں