ایفیڈرین کیس، عدالت نے حنیف عباسی کی ضمانت منسوخ کرنے کا عندیہ دیدیا

راولپنڈی: راولپنڈی میں انسداد منشیات کی خصوصی عدالت نے ایفیڈرین کیس کی سماعت کی اورملزمان حنیف عباسی و دیگر کے تاخیر سے آنے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا اور اپنے ریمارکس میں کہاکہ آئندہ وقت پرپیش نہ ہوئے توضمانتیں منسوخ کردی جائیں گی ۔ نجی ٹی وی کے مطابق ایفیڈرین کیس کی سماعت کے دوران انسداد منشیات عدالت کے جج راجہ پرویز اختر نے استغاثہ کے آخری گواہ اور تفتیشی افسرامتیاز شاہ کا بیان قلمبند کیا ۔ حنیف عباسی، ان کے بھائی باسط عباسی سمیت 8 ملزمان عدالت میں پیش ہوئے تاہم تاخیر سے پہنچے جس پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا تو ملزمان کے وکلاءنے عدالت کو وقت کی پابندی کرنے کی یقین دہانی کرادی جس پر فاضل جج کاکہناتھا کہ آخر ی موقع دے رہاہوں اور کیس کی سماعت ملتوی کردی۔

اس کیس کی سماعت کے دوران تفتیشی افسر نے بتایاکہ20جولائی 2012 کو تفتیش کیلئے مجھے تحریری حکم نامہ جاری کیا گیا، میں نے کیس کی تفتیش کے دوران زیڈ پی 19 روٹری مشین برآمد کی،برآمدگی کا ریکوری میمو بھی موجود ہے،یکم جنوری 2012 کو کراچی میں آصف شیخانی سے ریکارڈ مانگا،لائسنس ہولڈرپاک ٹریڈرکراچی افتخار شیخانی کو بھی تفتیش میں شمولیت کیلئے طلب کیا، دونوں میں سے کوئی بھی تفتیش میں شامل نہیں ہوا۔ کیس کی آئندہ سماعت پر مزید کارروائی ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں