فوج اور حکومت ایک ہی کشتی کے سوار ہیں، احسن اقبال

ننکانہ صاحب: وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ وہ پاک فوج کے ہر ایک سپاہی کی عزت کرتے ہیں، ان کا بیان فوج کے خلاف نہیں تھا۔ ننکانہ صاحب میں شہید کیپٹن حسنین نواز کے اہلخانہ سے تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ حکومت اور پاک فوج کے درمیان اس وقت کسی قسم کا اور کسی سطح پر ایک بال برابر بھی فرق نہیں، ہم سب پاکستان کو مضبوط اور پرامن بنانے کے لیے کردار ادا کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو جنگ ہم لڑ رہے ہیں اس میں کامیابی تب ہی حاصل کی جاسکتی ہے کہ ہم اس جذبے سے کام کریں کہ ہم ایک ہی کشتی کے سوار ہیں۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ پاک فوج حکومت کی پشت پر اور حکومت پاک فوج کی پشت پر ہے، ملک کے دشمنوں کی کوشش ہے کہ بداعتمادی پیدا کی جائے، مضبوط پاکستان کے لیے ہمیں صفوں میں یک جہتی کی ضرورت ہے۔ احسن اقبال نے کہا کہ ہم ایک اقتصادی جنگ بھی لڑرہے ہیں تاکہ پاکستان کا مستقبل محفوظ بنے، ہم نے اندھیروں کو شکست دی ہے، جہاں 20 گھنٹے بجلی نہیں آتی تھی وہاں اب 20 گھنٹے آتی ہے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کے بیان کے حوالے سے ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ میں نے بیان دیا اور انہوں نے وضاحت کردی، بات ختم ہوگئی، میرا بیان نہ فوج کے خلاف تھا ہر ایک سپاہی کی ہم عزت کرتے ہیں۔

احسن اقبال نے کہا کہ ایک طبقہ کہتا ہےکہ ملک میں ہر چیز بیڑا غرق اور ستیاناس ہے، ہمیں ایسا کہنے والے طبقے سے اختلاف ہے، میڈیا چیزوں کو متنازع بنانے سے گریز کرے۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ کیپٹن حسنین وہ قابل فخرسرمایہ ہےجس پر ہماری نسلیں بھی فخر کریں گی، جن 3 سپاہیوں نے ان کے ساتھ جام شہادت نوش کیا ان پر بھی فخر ہے. احسن اقبال نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ حکومت اور فوج کے درمیان کوئی دراڑ ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں