عمران خان اور طاہرالقادری کی جائیدادوں کا ریکارڈ عدالت میں پیش

اسلام آباد: ایس ایس پی تشدد کیس میں انسداد دہشتگردی کی عدالت میں اشتہاری ملزمان عمران خان اور ڈاکٹر طاہر القادری کی جائیدادوں کا ریکارڈ پیش کردیا گیا ہے جس کے بعد ان کی جائیدادوں کی قرقی کا عمل شروع ہو جائے گا۔ اس کے بعد قرقی ہوئی تو دونوں رہنما اپنی جائیدادوں سے محروم ہو جائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق انسداد دہشتگردی کی عدالت میں جج شاہ رخ ارجمند نے ایس ایس پی تشدد کیس کی سماعت کی۔

دوران سماعت ایس ایس پی عصمت اللہ نے بیان ریکارڈ کرا یا۔ ایس ایس پی عصمت اللہ نے اپنے بیان میں کہا ’دھرنے کے دوران 70 سے 80 بلوائی پی ٹی وی اورریڈ زون کی طرف بڑھ رہے تھے جنہیں روکنے کے لیے پہنچا تومجھ پرحملہ کردیا گیا‘۔ دوران سماعت عدالت میں عمران خان اور ڈاکٹر طاہر القادری کی جائیدادوں کا ریکارڈ بھی پیش کیا گیا، عدالت نے عمران خان کی لاہور اور میانوالی میں موجود جائیدادوں کا ریکارڈ بھی طلب کرلیا ہے ، ریکارڈ مکمل ہونے کے بعد دونوں ملزمان کی جائیدادوں کی قرقی کا عمل شروع ہوجائے گا۔واضح رہے کہ ایس ایس پی تشدد کیس میں عدالت میں پیش نہ ہونے پر عمران خان اور طاہر القادری کو اشتہاری قرار دیا جا چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں