لاہور میں بھی خاتون پر تیز دھار آلے سے حملہ

لاہور: کراچی میں خواتین پر تیز دھار آلے سے حملوں کا ملزم ابھی تک سندھ پولیس کے لیے معمہ بنا ہوا ہے۔ ابھی یہ خوف ختم نہیں ہوا تھا کہ صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں نامعلوم موٹرسائیکل سوار کا تیز دھار آلے سے خاتون پر حملہ کرکے پنجاب پولیس اور شہریوں کو پریشان کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق یہ واقعہ چوہنگ کی نجی ہاؤسنگ سوسائٹی میں پیش آیا جس کے دوران خاتون شکیلہ پر حملہ کیا گیا۔ پولیس کے مطابق زخمی 45 سالہ خاتون نے قانونی کارروائی سے انکار کردیا ہے تاہم پولیس تفتیش میں مصروف ہے۔ خاتون کو ٹانگ اور کمر پر گہرے زخم آئے جبکہ انہیں22 ٹانکے بھی لگے۔

شکیلہ تین روز قبل سعودی عرب سے بیٹے کے رشتے کے سلسلے میں لاہور پہنچی تھیں۔ خاتون کا کہنا ہے کہ میری کسی سے دشمنی نہیں، حملہ آور نے ہیلمٹ پہن رکھا تھا نہیں پہچان سکتی۔ اس حملے کے حوالے سے کہا جارہا کہ اسے فوری طور پر کراچی میں چھری کے وار سے خواتین پر حملوں کے واقعات سے جوڑنا درست نہیں ہوگا۔ تاہم شہریوں میں یہ خوف پیدا ہوگیا ہے کہ کراچی میں ایک حملہ آور کہیں پورا گینگ تو نہیں نے جس نے مرحلہ وار پہلے کراچی میں کارروائیاں کی اور اب لاہور میں کارروائی کی۔ دونوں صورتوں میں یہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کا امتحان ہے کہ وہ ایسے واقعات کی روک تھام ممکن بنائے اور ملوث افراد گرفتار کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں