مہم جوئی کی صورت میں منہ توڑ جواب دیا جائے گا، آرمی چیف

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہےکہ پاکستان کو کسی بھی قیمت پر دہشت گردی سے پاک کرناہمارا فرض ہے اور دہشت گردی کے خلاف ہماری جنگ کامیابیوں سے ہمکنار ہوگئی ہے۔ پی اے ایف اصغر خان اکیڈمی میں گریجویٹ کیڈٹس کی پاسنگ آؤٹ پریڈ کی تقریب ہوئی جس میں آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ مہمان خصوصی تھے۔ آرمی چیف نے پاس آوٹ ہونے والے 129 کیڈٹس کو بیجز لگائے اور گریجویٹ اور ایوارڈ جیتنے والے کیڈٹس کو مبارکباد دی جب کہ اس موقع پر جنرل قمر باجوہ نے سعودی عرب اور اردن کی شاہی فضائیہ کے گریجویٹ کیڈٹس کو بھی مبارکباد دی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ پاک فضائیہ ملکی دفاع کا ایک اہم ترین عضو ہے، پی اے ایف کی بہترین کارکردگی سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابی ملی، پاک فضائیہ نے دہشت گردوں کی پناہ گاہوں اور تربیتی مراکز کو تباہ کرنے میں اہم کردارادا کیا۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ہم امن و سلامتی کے قیام کے لیے پرعزم ہیں، کسی کو بھی اپنے ایکشن کی غلط تشریح نہیں کرنے دیں گے، امن کا قیام ہی پاکستان میں استحکام اور سلامتی کی ضمانت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کسی اندرونی و بیرونی خطرے اور جارحیت سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں، دشمن خواہ چھوٹا ہو یا بڑا، مہم جوئی کی صورت میں منہ توڑ جواب دیا جائے گا اور کسی جارحیت کی صورت میں دشمن کوناقابل تلافی نقصان پہنچے گا۔

آرمی چیف کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہم نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں، کسی ملک نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان سے بڑھ کر قربانیاں نہیں دیں، بدقسمتی سے عالمی برادری نے پاکستان کی قربانیوں کو تسلیم نہیں کیا۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ آپریشن ردالفساد کے تحت باقی ماندہ دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے اقدامات اٹھائے، پاکستان کو کسی بھی قیمت پر دہشت گردی سے پاک کرناہمارا فرض ہے، دہشت گردی کے خلاف ہماری جنگ کامیابیوں سے ہمکنار ہوگئی ہےاور مسلح افواج قوم کے تعاون سے جلد کامیابی حاصل کریں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں