سیاست میں فوج کا عمل دخل نہیں: میجر جنرل آصف غفور

راولپنڈی : ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ سیاست میں پاک فوج کا کوئی عمل دخل نہیں ، پاک فوج آئین اور قانون کے تحت ملک کی حفاظت کر رہی ہے، ملک میں مارشل لاءکا تاثر دینا بالکل بے بنیاد اور کوئی بھی اس پر بات نہ کرے کیوں کہ اس معاملے پر بات بھی کرنا بالکل فضول ہے۔ راولپنڈی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے سربراہ میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ پاک فوج کو آئین اور قانون کے تحت جو حکم ملتا ہے وہ اسے کرنے کی پابند ہے ، پاناما لیکس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی میں آئی ایس آئی اور ایم آئی کا کردار آئینی تھا اور اس کا حکم سپریم کورٹ نے دیا تھا ،جے آئی ٹی کے بعد ایک معاملہ چل رہا ہے جو ہمیں پتا ہے اور سپریم کورٹ اس پر کام کر رہی ہے جبکہ پاک فوج آئین میں رہتے ہوئے اپنا کام کرے گی مگر موجودہ معاملے کے پیچھے فوج ہے یا مارشل لا لگانا چاہتا ہے اس پر بات کرنا بھی فضول ہے۔

ایران اور افغانستان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ ہماری سرحدیں ایران اور افغانستان سے ملتی ہیں، ہمیں ایران اور افغانستان سے کوئی خطرہ نہیں لیکن سرحد پر موجود غیر ریاستی عناصر سے خطرات موجود ہیں اور ہمارے تمام آپریشن کسی بھی ملک کی حکومت یا فوج کے خلاف نہیں بلکہ دہشت گردوں کے خلاف ہے جو تینوں ممالک کے مشترکہ دشمن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عنقریب آرمی چیف ایران کا دورہ کرکے سیکیورٹی کا ایشو اٹھائیں گے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہناتھا کہ بدقسمتی سے بھارت کا رویہ درست نہیں، بھارت نے شرانگیزی کی قیمت بھی چکائی ہے اور اگر وہ باز نہ آیا تو اسے مزید قیمت چکانی پڑے گی جب کہ ہم پر امن ہیں اور کسی قسم کی جنگ نہیں چاہتے لیکن ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو بھرپور جواب کا حق رکھتے ہیں اور ضرورت پڑی تو جواب بھی دیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں