ن لیگ نے فوج سے ٹکراؤ کا اعلان کردیا ہے، شیخ رشید

اسلام آباد: عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ ایک سو چھبیس دن میں ساری جماعتیں انتخابی اصلاحات پر متفق تھیں اور تمام جماعتوں نے انتخابی اصلاحات کے معاہدے پر دستخط کیے لیکن کل چور مچائے شور کی فلم چلا دی گئی۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ ن لیگ کے اقدامات سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ن لیگ نے تصادم کا فیصلہ کرلیا ہے۔ کل انہوں نے ایک شخص کو بچانے کے لیے راکٹ لانچر مارا ہے، ایک شخص کو بچانے کیلئے بل پاس کرایا گیا ہے۔ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے دوبارہ مسلم لیگ ن کا صدر بن کر فوج کو براہ راست پیغام دیا ہے، انہوں نے لندن میں الطاف حسین سے بات کی ہے ، امریکہ میں انہوں نے دنیا کی مہنگی ترین ایجنسی ہائر کی ہے، یہ ٹکراﺅ کی طرف جا رہے ہیں۔

شیخ رشید احمد نے کہا کہ انہیں پتہ ہی نہیں چلا کہ انتخابی اصلاحات میں ترمیم کا بل منظور کرلیا گیا ہے، یہ ان کی بہت بڑی غلطی ہے اور وہ اپنی اس غلطی کو تسلیم کرتے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں شیخ رشید نے کہا کہ انہیں پتہ چل بھی جاتا تو وہ اس بل کو نہیں روک سکتے تھے کیونکہ اگر سینیٹ میں یہ بل منظور نہ بھی ہوتا تو مسلم لیگ ن نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں اسے منظور کرالینا تھا۔ شیخ رشید نے کہا کہ پنجاب میں عمران خان اور ن لیگ کا مقابلہ ہوگا پیپلزپارٹی حریف نہیں ہے۔ سندھ میں بھی عمران خان پیپلزپارٹی سے لڑنے جا رہے ہیں اور وہاں ن لیگ کا نام و نشان نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ آصف زرداری کو صرف اتنی دلچسپی ہے کہ نیب کا چیئرمین ان کی مرضی کا لگ جائے اس سے زیادہ اب ان کی سیاست میں دلچسپی نہیں رہی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں