ختم نبوت قانون میں‌کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، طلال چوہدری

اسلام آباد: مسلم لیگ ن کے رہنما اور وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری نے کہا ہے کہ ختم نبوت کے حوالے سے قانون میں کوئی ترمیم نہیں کی گئی مخالفین کے پاس جب ایشو ختم ہو جائیں تو وہ اس طرح کا جھوٹا پروپیگنڈہ کرتے ہیں۔ اس طرح کی خبریں من گھڑت اور بے بنیاد ہیں میڈیا کو اس حساس موضوع پر بات کرنے سے پہلے تصدیق ضرور کرنی چاہئے۔ اسلام آباد میں مسلم لیگ ن

کے پارٹی صدر کے انتخاب کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے طلال چوہدری کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے بغیر مسلم لیگ ن نامکمل ہے۔ ن لیگ سے نواز شریف کو مائنس کرنے والوں کو آج منہ کی کھانا پڑی ہے۔ ن ہے تو مسلم لیگ ہے اور ن کے بغیر مسلم لیگ کی کوئی اہمیت نہیں۔ طلال چوہدری نے کہا کہ آمروں کی ترامیم کو ختم کرنا ن لیگ کا نصیب ہے۔ معاشی دھماکاکرناہویاسی پیک جیسےپراجیکٹ یہ بھی ن لیگ کاتحفہ ہیں۔ جو کام ملک میں پہلے نہیں ہوئے وہ کام ن لیگ اور نوازشریف کرتے ہیں۔ طلال چوہدری نے کہا کہ پی ٹی آئی اور شیخ رشید کی ہر پٹیشن پر کیا فیصلہ نوازشریف کیخلاف ہی آنا ہے۔ اس ترمیم پر تکلیف کیوں ہوتی ہے جس کا کچھ نہ کچھ فائدہ نوازشریف کو ملے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ دن لگیں گے اور سارے مہرے بےنقاب ہوجائیں گے۔ بات نواز شریف کی نہیں جمہوریت کی ہے۔ طلال چوہدری نے کہا کہ آئین میں آمر کی ترمیم جمہوری طریقے سے نکال دی گئی۔ روکنےوالے جتنا روکیں عزت دینے والا خدا ہے۔ ہمیں وہ سیاست ہی نہیں کرنی جس میں ن نہ ہو۔ سازش سے نوازشریف کو نہیں ہٹایا جاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ شیخ رشید ہمیں پتا ہے تمہاری پٹیشن کہاں سے انگلش میں لکھ کرآتی ہیں۔ شیخ رشیدکوانگریزی میں نام لکھنا نہیں آتاہزاروں صفحات کی انگلش میں پٹیشن کرتے ہیں۔ عدالت کےکندھوں پر اتنا بوجھ نہ ڈالیں کہ ان کےاحترام میں کمی آئے۔

وزیر مملکت کا کہنا تھا کہ کسی ادارے اور شخص کے خلاف نہیں قانون کی حکمرانی کیلیے انکوائری ہوگی۔ یہ نوازشریف کی بات نہیں ، انصاف تالے لگا کر نہیں ہوسکتا۔ 13 ججز اور ان کے عملے کو تالا لگا کر بند کیا گیا۔ نواز شریف آج صدر بن جائیں گے اور آیندہ الیکشن میں وزیراعظم بن جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کیا یہ نواز شریف کا حق نہیں کہ انھیں عام پاکستانی جیسے حقوق ملیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں